موسم گرما میں جلد کی تکلیف

  • Wednesday, 02 April 2014 06:32
  • Published in میک اپ
  • Read 1287 times

شہر کے نامور ڈاکٹروں کا مشورہ ہے کہ لوگ زیادہ سے زیادہ پانی پیئیں اور کچھ ضروری کریم وغیرہ جلد پر لگائیں تا کہ جلد پر گرمی کا زیادہ اثر نہ ہواورگرمی سے محفوظ رہا جاسکے

چلچلاتی دھوپ اور امس بھری گرمی کا سب سے زیادہ سامنا آپ کی جلد کو کرنا ہوتا ہے۔ موسم گرما کے اس موسم میں جلد پر مسلسل پڑتی دھوپ کو روکنا یا اس کے ضمنی اثرات سے بچنے جیسا ناممکن ہی ہے۔ لیکن تھوڑی سی توجہ اور دیکھ بھال سے آپ چاہیں تو موسم گرما میں بھی تازہ اور خوبصورت لگ سکتے ہیں۔ آج کل خواتین ہوں یا مرد تمام کاروباری ہیں۔ ایسے میں اپنی جلد اور بالوں کی خوبصورتی کو برقرار رکھنا بہت مشکل ہے۔ ہم آپ کے سامنے لا رہے ہیں آپ کی جلد کی دیکھ بھال کا ایک مکمل پروگرام۔ سمجھیں اپنی جلد کو اور رکھیں اس کا خیال۔

 

کیوں ضروری ہے موسم گرما میں اضافی توجہڈاکٹر صدر رنگونی ، ڈاکٹر منیش گوتم ، ڈاکٹر قدیر شیخ کا کہنا ہے کہ موسم گرما میں گرم ہواؤں اور تیز دھوپ سے ہمارے جسم کی حفاظت کرنے میں سب سے اہم کردار جلد ہی ادا کرتی ہے۔ موسم کی مار جھیلنے میں جلد کو کئی پریشانیاں ہوتی ہیں جس سے جلد جھلس جاتی ہے۔ اسی موسم میں جلد کو ہونے والی تمام بیماری جن کے چہرے پر جھرریاں پڑ جانا، جلد کا سخت اور بے جان ہو جانا اور گرم ہواؤں اور تیز دھوپ میں جلد کی اوپری پرت کا پانی جانا عام بات ہے۔ ایسے میں موسم گرما میں چہرے کی دیکھ بھال کرنا بے حد ضروری ہے۔ گرمی کے موسم میں آدھی سے زیادہ بیماریاں جلد میں انفیکشن ہو جانے کی وجہ سے ہی ہوتی ہیں۔ جلد میں ہونے والے انفیکشن سے بچنے کا صرف ایک ہی طریقہ ہے - جسم کی صفائی رکھنا۔

 

موسم گرما میں ہونے والی عام پریشانیاںجلد کے جھلسنے اور ٹیننگ: موسم گرما میں سن برن ہونا عام مسئلہ ہے۔ جلد کے دھوپ کے رابطہ میں آنے پر جلد میں سرخی، سوجن اور کبھی کبھی چھالے بھی ہوجاتے ہیں۔ دھوپ کے مسلسل اثرات سے جلد کو نقصان پہنچتا ہے۔ مختلف جلد کے لوگوں پر اس کا الگ اثر ہوتا ہے، جیسے گوری رنگت والے لوگوں کو زیادہ سن برن ہوتا ہے جبکہ گہری رنگت والے لوگوں کو دھوپ کی وجہ سے جلد کا رنگ اور بھی سیاہ ہو جاتا ہے۔ سورج سے نکلنے والی الٹرا وائيلیٹ کرنوں سے جلد کی اوپری سطح کو بہت زیادہ نقصان پہنچتا ہے۔

علاج: دھوپ میں نکلنے سے پہلے کم سے کم 25 /ایس پی ایف والا سن اسکرین یا كیلامن لوشن لگائیں۔ اس کے ساتھ ہی دھوپ سے بچنے کے لئے چہرے پر کپڑا رکھیں یا چھتری کا استعمال کریں۔ اگر بہت زیادہ کھجلی یا جلن ہو تو ڈاکٹر کو ضرور دکھائیں۔ اس کے علاوہ الرجی ہونے پر الرجی کی دوا لیں اور رات میں سوتے وقت لوشن لگائیں۔

گھموريا: موسم گرما میں پسینہ آنے پر جسم کے ڈیڈ سیل پسینے کے باہر نکلنے میں رکاوٹ بنتے ہیں جس سے جسم پر اس سرخ ریشیز پڑ جاتے ہیں جنہیں گھموريا کہتے ہیں۔ گھموريا جسم کے اس حصہ پر ہوتی ہیں جہاں پسینہ جمع ہوتا ہے۔

علاج: گھموريو سے بچنے کے لئےڈھيلے کپڑے پہننا، نہانے کے بعد ٹیلكم پاؤڈر لگانا اور ریشیز ہونے پر كیلامن لوشن لگائیں۔ اس کے ساتھ ہی ایک ہفتے تک وٹامن سی کی ٹیبلیٹ لینے سے بھی فائدہ ہوگا۔

مهاسے: زیادہ گرمی، امس، ڈیڈ اسکن اور تیل وغیرہ جلد کے خلیات کو بند کر دیتے ہیں جس سے بلیک ہیڈ، وائٹ ہیڈ وغیرہ کے بڑھنے سے مهاسے ہوتے ہیں۔ جن لوگوں کی جلد آئيلي ہوتی ہے انہیں مهاسوں کا مسئلہ زیادہ ہوتا ہے۔علاج: مهاسوں کو کم کرنے کے لئے ضروری اینٹی بائیٹک کے لئے جلد کے ماہر سے رابطہ کریں۔ اس کے علاوہ ساسلك ایسڈ پرمشتمل فیش واش استعمال کریں۔ اگر مهاسوں کا مسئلہ بہت زیادہ ہے تو لیزر ٹریٹمنٹ لیا جا سکتا ہے۔

پیسنے کی بدبو: پسینے کی بدبو کی وجہ صرف زیادہ پسینہ آنا نہیں بلکہ بیکٹیریا کا بڑھنا بھی ہے۔علاج: دن میں کم سے کم دو بار نهائیں۔ نہانے کے پانی میں ایک چمچ وہائٹ وینیگر ملا کر نہانے سے پسینے سے بدبو نہیں آتی۔ نہانے کے پانی میں گلاب کا پانی ڈال کر نہانے سے بھی پسینے سے کم بدبو آتی ہے۔ڈینڈرف :بالوں میں ڈینڈرف ہونے کا اہم سبب اسكیلپ (سر کی جلد) پر تیل، ڈیڈ اسکن، پسينہ اور گندگی کا آپس میں ملنا ہے۔ اس سے نہ صرف بالوں میں ڈینڈرف ہوتا ہے بلکہ بالوں کا جھڑنا، کھجلی اور پیشانی پر پھنسي ہونے جیسا مسئلہ ہوتا ہے۔علاج: اس کے لئے ضروری ہے کہ موسم گرما میں ہر دو دن میں اپنے بال دھو لیں تاکہ گندگی جمع نہ ہو۔ اس کے ساتھ ہی آپ ڈیڈرف کے لئے خاص شیمپو کا انتخاب کریں۔ ان شیمپو میں 2 فیصد كیٹاكنوجولے اور جیڈپی ٹي او ہوتا ہے تو ڈینڈرف کو روکنے کا کام کرتے ہیں۔ اس کے علاوہ آپ گھریلو نسخوں جیسے لیمو یا دہی سر کی جلد پر لگا سکتے ہیں۔

ہیلتھی جلد کے لئے ڈائٹ ضروری ہے۔جیسے آپ کے جسم کو فٹ رکھنے کے لئے اچھی ڈائٹ بے حد ضروری ہے ویسے ہی اچھی جلد کے لئے آپ کی ڈائٹ کافی ضروری ہے۔ لیکن جہاں جسم کو فٹ رکھنے کے لئے کم موٹی والی ڈائٹ ضروری ہے وہیں اس کے برعکس اچھی جلد کے لئے فٹنیس کی کافی ضرورت ہوتی ہے۔ دراصل جلد کو ہیلتھی اور مائشچر مشتمل رکھنے کے لئے موٹاپے کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس کے لئے فیٹی ایسڈس مثلا، مچھلی ، انڈے، فلیکس سيڈس، والنیٹس اورہری سبزی وغیرہ آپ کے لئے انتہائی فائدہ مند رہیں گی۔ وٹامن اے اور سی پر مشتمل ڈائٹ آپ کی جلد کے لئے بہت ضروری ہیں. گاجر کا رس، آئونلے کا رس، سنترا، سیب،ا سٹرابیری،بلیو بیریس ، انّاناس کا رس، بندگوبھي، كھيرا، لیمو وغیرہ کے استعمال سے آپ کی جلد میں چمک آ جاتی ہے. اس کے ساتھ ہی موسم گرما میں مانع ڈائٹ ہر معنوں میں آپ کی صحت اور جلد دونوں کے لئے ہی اچھی رہتی ہے۔

Rate this item
(0 votes)
  • Last modified on Monday, 04 April 2016 06:28
  • font size