ہندوستان نے کشمیر میں مداخلت پر پاکستان کو لتاڑا

ہندوستان نے کشمیر میں مداخلت پر پاکستان کو لتاڑا All images are copyrighted to their respective owners.

برہان وانی کی موت کے بعد سے ہی ہندوستان اور پاکستان کے درمیان لفظی جنگ چل رہی ہے

اقوام متحدہ: (ایجنسی) ہندوستان نے وادی کشمیر میں تشدد کو پاکستان سے ملنے والی مبنی بر حکمت عملی تا ئید و حمایت کے پیش نظر کہا ہے کہ پاکستان ایک ایسا ملک ہے جو دوسروں کی زمین پر قبضہ جمانا چاہتا ہے، دہشت گردی کو سرکاری پالیسی ساز طور پر استعمال کرتا ہے اور اقوام متحدہ کی فہرست میں شامل دہشت گردوں کو پناہ دیتا ہے۔

اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندے سید اکبرالدین نے کل انسانی حقوق پر ایک پروگرام میں کہا کہ پاکستان وہی ملک ہے جو انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے اپنے طویل ریکارڈ کی وجہ سے انسانی حقوق کونسل کی رکنیت حاصل کرنے کے لئے بین الاقوامی برادری کی حمایت حاصل کرنے میں ناکام رہا ہے۔

انہوں نے کہا’’پاکستان ایک ایسا ملک ہے کہ جو دہشت گردوں کی ستائش کرتا ہے اور اقوام متحدہ کی فہرست میں شامل دہشت گردوں کو پناہ دیتا ہے‘‘۔

 اکبر الدین نے پاکستان کی طرف سے وادی کشمیر میں حزب مجاہدین کے کمانڈر برہان وانی کے مارے جانے کا مسئلہ اٹھائے جانے پر یہ سخت تبصرہ کیا ہے۔ پاکستان کی سفیر مليحہ لودھی نے برہان کو’’کشمیری رہنما‘‘ اور اس کی موت کو’’ماورائے عدالت ‘‘بتایاتھا۔

ہندوستانی سفیر نے کہا کہ پاکستان کی مفاد پرستانہ کوششوں كو اقوام متحدہ میں یا کسی دوسرے پلیٹ فارم پر کوئی حمایت نہیں ملے گی۔ ہندوستان کو متنوع ، کثرت پسند اور روادار معاشرہ بتاتے ہوئے اکبر الدین نے کہا کہ قانون، جمہوریت اور انسانی حقوق کے تئیں ملک کا عزم اس کے اصل اصول ہیں انہوں نے کہا، ’’ہم بات چیت اور تعاون کے ذریعے تمام انسانی حقوق کو فروغ اور ان کی حفاظت کے تعلق سے مصروف عمل ہیں‘‘۔

برہان وانی کی موت کے بعد سے ہی ہندوستان اور پاکستان کے درمیان لفظی جنگ چل رہی ہے۔ پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف نے وانی کی موت کو انسانی حقوق کی خلاف ورزی قرار دیا اور فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے بھی اس کی مذمت کی۔ جواب میں ہندوستان نے پاکستان سے کہا ہے کہ وہ اس کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرنے سے باز آئے۔

Rate this item
(0 votes)

Related items