اروناچل پردیش میں صدر راج منسوخ

  • Wednesday, 13 July 2016 20:47
  • Published in قومی
اروناچل پردیش میں صدر راج منسوخ All images are copyrighted to their respective owners.

سپریم کورٹ نے اروناچل پردیش میں صدر راج کو منسوخ کرکے کانگریس حکومت کو بحال کیا

نئی دہلی: (ایجنسی) سپریم کورٹ نے آج ایک تاریخی فیصلہ کرتے ہوئے اروناچل پردیش میں گورنر جیوتی پرساد راج کھووا کی جانب سے اسمبلی اجلاس ایک ماہ قبل طلب کرنے کے فیصلے کو آئین کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے ریاست میں ۱۵؍ دسمبر ۲۰۱۵ء سےپہلے کی صورتحال بحال کرنے کا حکم دیا۔

جسٹس جے ایس کیہر کی صدارت والی پانچ رکنی آئینی بنچ نے اروناچل پردیش میں اقتدار کی تبدیلی کیلئے گورنر کے فیصلے کو غلط قرار دیا۔

آئینی بنچ نے کہا کہ اروناچل پردیش اسمبلی کا اجلاس ۱۴؍ جنوری ۲۰۱۶ء کو طلب کیا جانا تھا، لیکن اسے تقریباً ایک ماہ قبل ۱۶؍ دسمبر۲۰۱۵ء کو بلایا گیا، جو آئین کے آرٹیکل۱۶۳؍ کی خلاف ورزی ہے اور یہ رد کرنے لائق ہے۔

اتراکھنڈ کے بعد کانگریس پارٹی کو عدالت عظمیٰ سے یہ دوسری قانونی فتح ملی ہے۔

عدالت کے اس فیصلے سے ریاست میں نابم ٹوکی حکومت بحال ہوگئی ہے۔ عدالت نے اقتدار کی تبدیلی کے لئے گورنر کے فیصلے کو غلط ٹھہرایا ہے۔ آئینی بنچ نے کہا ہے کہ اروناچل پردیش اسمبلی کا اجلاس ایک ماہ قبل بلانے کا گورنر کا فیصلہ آئین کی خلاف ورزی ہے اور یہ رد کرنے لائق ہے۔

عدالت نے یہ بھی کہا کہ گورنر کے ۹؍ دسمبر ۲۰۱۵ء کے حکم پر عمل کرتے ہوئے اسمبلی نے جو بھی قدم اٹھائے اور جو فیصلے کئے وہ بھی منسوخ کئے جائیں گے اور ۱۵؍ دسمبر ۲۰۱۵ء سے پہلے کی صورتحال بحال کی جائے گی۔

قابل ذکر ہے کہ کانگریس کے باغی لیڈر کالیکھوپول نے بی جے پی کی مدد سے ریاست میں سرکار بنائی تھی۔ کانگریس کے باغی ممبران اسمبلی نے بی جے پی کے ساتھ مل کر وزیراعلی بنام ٹو کی کو ہٹادیا تھا جس کے بعد کانگریس نے عدالت عظمی سے رجوع کیا تھا۔

کانگریس صدر سونیا گاندھی نے اروناچل پردیش معاملے میں سپریم کورٹ کے فیصلے کو تاریخی قرار دیتے ہوئے آج امید ظاہر کی اس سے مرکزی حکومت اقتدارکا غلط استعمال کرنے سے باز آئے گی۔

محترمہ گاندھی نے ایک بیان میں کہا کہ اس فیصلے سے آئینی وقار اور جمہوری قدروں کی خلاف ورزی کرنے والوں کی شکست ہوئی ہے اور اس سے آئین کے ذریعہ تفویض کردہ جمہوری قدریں مضبوط ہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ اروناچل پردیش حکومت کو غیر آئینی طریقے سے ہٹایا گیا تھا ۔ کانگریس جمہوریت کو مضبو ط کرنے اور ملک کے وفاقی ڈھانچے کی حفاظت کرنے کے لئے اپنی جدوجہد جاری رکھے گی۔

صدر کانگریس نے اس موقع پر اروناچل پردیش کے عوام کو مبارک باد دی۔

Rate this item
(0 votes)

Related items