بنگلہ دیش میں پیس ٹی وی پرپابندی

بنگلہ دیش میں پیس ٹی وی پرپابندی All images are copyrighted to their respective owners.

بنگلہ دیش میں ذاکر نایک کے مالی لین دین کی جانچ شروع

ڈھاکہ :(ایجنسی) بنگلہ دیش میں ڈاکٹر ذاکر نایک کے چینل پیس ٹی وی پرپابندی عائد کردی گئی ہے ۔بنگلہ دیش کے مطابق یہ قدم اس انکشاف کے بعد اٹھایا گیا ہے کہ ڈھاکہ کے ایک ریستوراں میں دہشت گردانہ حملہ کر کے ۲۲؍افراد کا قتل کرنے والوں دہشت گردوں میں سے ۲؍  ذاکر نائیک کی تقریروں سے متاثر تھے ۔ پیس ٹی وی پر پابندی کا فیصلہ ایک خصوصی کابینی میٹنگ میں کیا گیا ، جس میں سینئر وزرا اور سینئر سیکورٹی افسران نے شرکت کی ۔

صنعت کے وزیر عامر حسین کے مطابق میٹنگ میں جمعہ کی نماز کے دوران ہونے والی تقریروں کی بھی نگرانی کا بھی فیصلہ کیا گیا کہ کسی جگہ اکسانے والی تقریریں تو نہیں کی جارہی ہیں ۔علاوہ ازیں حکومت نے مساجد کے ائمہ سے یہ بھی اپیل کی ہے کہ وہ اپنی تقریروں میں دہشت گردی کے خلاف اسلام کی سچی تعلیمات کے بارے میں بتائیں اور لوگوں کو اس لعنت سے دور رہنے کی تلقین کریں ۔

ادھر بنگلہ دیش کے وزیر داخلہ نے کہا ہے کہ ذاکر نایک کی تقریروں کی جانچ کی جارہی ہے۔

 اسدالزماں خان نے کہا کہ ذاکر نایک ہماری انٹلی جنس ایجنسیوں کے رڈار پر ہیں اور ایجنسیاں اس کی بات کی جانچ کررہی ہیں کہ ان کی تقریریں کہیں اکسانے والی تو نہیں ہیں ۔

 وزیر داخلہ کے مطابق بنگلہ دیش میں ذاکر نایک کے مالی لین دین کی بھی جانچ کی جارہی ہے۔

Rate this item
(0 votes)

Related items