ذاکر نایک پر تحقیقات کے بعد کارروائی: راج ناتھ

ذاکر نایک پر تحقیقات کے بعد کارروائی: راج ناتھ All images are copyrighted to their respective owners.

 بیانات سے ایسے اشارے مل رہے ہیں کہ نایک کی جلد گرفتار ی بھی ہو سکتی ہے

نئی دہلی: (ایجنسی) وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ متنازعہ مبلغ اسلام ڈاکٹر ذاکر نایک کے مبینہ اشتعال انگیز تقاریر کی جانچ کے بعد ان کی سرگرمیوں کے پیش نظر کوئی کارروائی کی جائے گی۔

  ذاکرنایک  کی بابت جو ہندستان میں بظاہر سلفی نظریات عام کرتے ہیں اور اپنی تقریروں کی وجہ سے اندنوں کافی تنازعات میں گھر گئے ہیں، مرکزی وزیر داخلہ کے اس سے پہلے بیان میں کہا گیا تھا کہ ذاکر کی تقاریر پر حکومت کی نظر ہے۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردی سے کسی بھی قیمت پر سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ دہشت گردی چاہے جس روپ میں بھی ہو اس کی مذمت ہونی چاہئے۔ان کے بیانات سے ایسے اشارے مل رہے ہیں کہ نایک کی جلد گرفتار ی بھی ہو سکتی ہے۔

مہاراشٹر کی حکومت پہلے ہی نایک کی تقریروں کی تحقیقات کا حکم  دے چکی ہے۔

اطلاعات و نشریات کے وزیر وینکیا نائیڈو اور اور وزیر داخلہ كرن رجيجو بھی نایک کے خلاف کارروائی کی بات کہہ چکے ہیں۔ ذاکر نایک ابھی ملک سے باہر ہیں اس کے وطن لوٹنے پر گرفتاری ہو سکتی ہے۔

    اسلامی ریسرچ فاؤنڈیشن کے سربراہ ذاکر نایک نے اپنے پرانے بیانات پر صفائی دینے کے بدلے نیا بیان جاری کر کہا ہے کہ ان پر لگائے گئے سارے الزامات بے بنیاد ہیں۔

 انہوں نے اس بابت سعودی سے کچھ ویڈیو کلپس بھی بھیجی ہیں۔ جس میں وہ ہندستانی میڈیا کو ہی کٹہرے میں کھڑا کر رہے ہیں۔ ویڈیو میں وہ یہ کہتے سنائی دے رہے ہیں کہ ان پر لگائے جانے والے تمام الزامات بے بنیاد ہیں۔

Rate this item
(0 votes)

Related items