یوم القدس کے موقع پر احتجاجی ریلیاں

یوم القدس کے موقع پر احتجاجی ریلیاں All images are copyrighted to their respective owners.

یوم القدس منانے کا آغاز ایران میں امام خمینی ؒنے۱۹۷۹ء کے اسلامی انقلاب کے ساتھ ہی کیا تھا

ممبئی:(ایجنسی) دنیا کے مختلف حصوں کی طرح ہندوستان میں بھی رمضان المبارک کے آخری جمعہ کو یوم القدس کے طور پر منایا گیا۔

نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد مساجد، خانقاہوں، زیارت گاہوں اور امام بارگاہوں سے فلسطینی عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی اور قبلہ اول کی آزادی کے حق میں پُر امن ریلیاں نکالی گئیں۔

اِن ریلیوں میں شامل لوگوں نے قبلہ اول کی آزادی کے لئے مسلم ممالک کے درمیان اتحاد کو ناگزیر قرار دیا۔ ریلیوں سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے اسرائیل کی بیت المقدس پر غاصبانہ قصبے کے خلاف اور اسرائیلی قبضے کے خاتمے کے مطالبے میں تقاریریں کیں۔

مقررین نے بیت المقدس کی آزادی کے لئے دعائیں بھی کیں۔ اس دوران ایک مشترکہ پروگرام کے تحت بڑی بڑی مساجد، خانقاہوں اور امام بارگاہوں میں ایک قرارداد کی عوام الناس سے تائید کرائی گئی، جس میں مسئلہ فلسطین کو یہاں کے عوام کی منشا اور مرضی کے مطابق حل کرانے پر زور دیا گیا اور عالمی برادری سے اپیل کی گئی کہ وہ ان سلگتے مسائل کو نپٹانے میں اپنا رول اور اثرورسوخ استعمال کریں۔

 فلسطین سمیت ان تمام خطوں کی آزادی کے لیے اجتماعی دعاؤں کا اہتمام کیا گیا، جو غیر ملکی قبضے میں ہیں اور جہاں مسلمان ظلم وستم اور جبروزیادتیوں کا نشانہ بنائے جارہے ہیں۔

یوم القدس منانے کا آغاز ایران میں امام خمینی ؒنے۱۹۷۹ء کے اسلامی انقلاب کے ساتھ ہی کیا تھا۔ علماء کا کہنا ہے کہ امام خمینیؑ کا مقصد فلسطینیوں کے لئے عالم اسلام کی یکجہتی کے لئے عالمی دن مقرر کرنا تھا کیونکہ فلسطین کے مسئلے کو لیکر وہ بے حد فکر مند تھے اور اس کو مسلمانان عالم کا مشترکہ مسئلہ سمجھتے تھے۔

Rate this item
(0 votes)

Related items