ممتاز محق و ادیب اسلم فرخی انتقال کرگئے

  • Friday, 17 June 2016 09:37
  • Published in ادبی
ممتاز محق و ادیب اسلم فرخی انتقال کرگئے All images are copyrighted to their respective owners.

 وہ استاد، شاعر، صاحب طرز نثر نگار، محقق، نقاد، بچوں کے ادیب اور ممتاز براڈ کاسٹر کی حیثیت سے جانے جاتے تھے

کراچی: (ایجنسی)معروف محقق ، ادیب اور جامعہ کراچی کے سابق استاد ڈاکٹر اسلم فرخی طویل علالت کے بعد بدھ کے روز انتقال کر گئے۔ مرحوم ۲۳؍اکتوبر ۱۹۲۳ءمیں لکھنؤ میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کا سابق وطن فتح گڑھ، ضلع فرخ آباد تھا۔ انہوں نے ایسے گھرانے میں آنکھ کھولی جو علم و ادب کا گہوارہ تھا۔ تعلیم سے فارغ ہونے کے بعد وہ درس و تدریس سے منسلک ہو گئے۔ کراچی یونیورسٹی میں وہ ناظم شعبہ تصنیف و تالیف و ترجمہ کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دیتے رہے کراچی یونیورسٹی میں رجسٹرارکے طور پر بھی کام کیا۔انہوں نے پی ایچ ڈی اور ایم فل کے متعدد مقالوں کی نگرانی کے فرائض انجام دیئے۔

ڈاکٹر اسلم فرخی نے براڈ کاسٹر کی حیثیت سے بھی بڑی خدمات انجام دیں۔

  ڈاکٹر اسلم فرخی کا شمار پاکستان کے ممتاز دانشوروں میں ہوتاتھا۔ وہ استاد، شاعر، صاحب طرز نثر نگار، محقق، نقاد، بچوں کے ادیب اور ممتاز براڈ کاسٹر کی حیثیت سے جانے جاتے تھے۔

کراچی میں سرکاری ریڈیو سے بحیثیت مسودہ نگار چھ سال منسلک رہے۔ اسلم فرخی مرحوم نے ریڈیو کے لیے فیچر، ڈرامے اور تقریریں لکھیں۔ وہ غزلیں اور نظمیں لکھتے تھے لیکن کبھی خود کو شاعر نہیں کہا۔ وہ کہتے تھے میری پہچان خاکہ نگاری کے علاوہ وہ کام ہے جو میں نے حضرت سلطان المشائخ کے حوالے سے کیا ہے۔ ڈاکٹر اسلم فرخی حضرت نظام الدین اولیاؒ کے بارے میں چھ کتابیں لکھ چکے ہیں۔ انہوں نے بچوں کے لیے بھی کتابیں لکھیں۔

پاکستان کے صدر مملکت ممنون حسین نے ممتاز ادیب اور دانشور ڈاکٹر اسلم فرخی کے انتقال پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے ان کے بلندی درجات کی دعا اور ان کے لواحقین سے ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ ڈاکٹر اسلم فرخی نے ادبی تحقیق اور تصوف کے میدان میں ناقابل فراموش خدمات انجام دیں جن کے لیے انھیں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ان کو صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی سے بھی نوازا گیا۔

ثانوی تعلیمی بورڈ کے چیئرمین پروفیسر انوار احمد زئی نے اسلم فرخی کے انتقال پر شدید رنج وغم کا اظہار کیا ہے۔ آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کی گورننگ با ڈی کے علاوہ محمد احمد شاہ نے ڈاکٹر اسلم فرخی کے انتقال کو ادبی دُنیا کےلئے نا قا بلِ تلا فی نقصان قرا ر دیا ہے۔

Rate this item
(0 votes)