چھوٹا راجن کو مارنے آئے شوٹر گرفتار

چھوٹا راجن کو مارنے آئے شوٹر گرفتار All images are copyrighted to their respective owners.

راجن قتل، تاوان اور منشیات اسمگلنگ کے ۷۰؍سے زیادہ مقدمات میں ملزم ہے

نئی دہلی: (ایجنسی) دہلی پولیس نے تہاڑ جیل میں قید انڈرورلڈ مافیا چھوٹا راجن کے قتل کی سازش کا انکشاف کرتے ہوئے چار کرایے کے قاتلوں کو گرفتار کیا ہے۔ گرفتار کئے گئے تمام قاتل ڈان داؤد ابراہیم کے دائیں ہاتھ چھوٹا شکیل کے اشارے پر چھوٹا راجن کو تہاڑ جیل میں مارنے آئے تھے۔

پولیس کی اسپیشل سیل کے خصوصی کمشنر اروند دیپ نے بتایا کہ کرایہ کے ان قاتلوں کی شناخت رابنسن، جنید یونس اور منیش کے طور پر کی گئی ہے۔ انہیں تین جون کو دہلی کے روہنی، سیلم پور، غازی آباد اور نوئیڈا سے پکڑے جانے کے بعد کل عدالت میں پیش کیا گیا تھا جہاں سے بعد میں انہیں پوچھ گچھ کے لئے پولیس حراست میں بھیج دیا گیا. پولیس کو ان کے بارے میں معلومات ان کے فون کالز ریکارڈ اور انٹرنیٹ چیٹ سے ملی تھی۔ یہ معلومات حاصل ہوئی تھی کہ یہ لوگ مسلسل چھوٹا شکیل سے رابطے میں تھے۔

پولیس کے مطابق انہیں راجن کو تہاڑ جیل سے عدالت لاتے ہوئے یا عدالت سے جیل لےجاتے وقت مارنے کے لیے کہا گیا تھا۔ انہیں حکم دیا گیا تھا کہ پہلے وہ راجن کے ڈرائیور کو ماریں اور بعد میں اس پر گولی چلائیں۔ راجن کے ڈرائیور کا دہلی میں اس وقت سے آنا جانا ہے جب سے راجن جیل میں بند ہے۔

پولیس کو ملزمان میں سے ایک کے پاس سے۴۰؍ ہزار روپے برآمد ہوئے ہیں۔ پولیس نے پکڑے گئے تمام ملزمان کے موبائل فون ضبط کر لئے ہیں۔ ملزمان کی ریکارڈ کی گئی آواز کو فورنسك لیبارٹری میں تحقیقات کے لئے بھیجا گیا ہے۔

آسٹریلیا کی وفاقی پولیس سے ملی انٹیلی جنس اطلاعات کی بنیاد پر۵۵؍ سالہ راجن کو گزشتہ سال نومبر میں انڈونیشیا کے بالی سے گرفتار کر کے ہندستان لایا گیا تھا۔ قریب۲۷؍ سال تک یہ انڈر ورلڈ ڈان پولیس کو چکما دیتا رہا۔ راجن قتل، تاوان اور منشیات اسمگلنگ کے ۷۰؍سے زیادہ مقدمات میں ملزم ہے۔

Rate this item
(0 votes)

Related items