۱۰۰؍روپے میں ایک سال تک انٹرنیٹ

۱۰۰؍روپے میں ایک سال تک انٹرنیٹ All images are copyrighted to their respective owners.

ڈاٹاونڈ فراہم کریگی ۱۰۰؍روپے میں ایک سال تک انٹرنیٹ خدمات

نئی دہلی:(ایجنسی) عام لوگوں، خاص طور سے دیہی علاقوں کے لوگوں کو سستی شرح پر انٹرنیٹ کی سہولت فراہم کرنے کے مقصد سے ڈاٹاونڈ ورچول نیٹ ورک آپریٹر (وي این او) کے لئے درخواست دیگی اور لائسنس ملنے پر محض ۱۰۰؍ روپے میں ایک سال تک انٹرنیٹ خدمات فراہم کریگی۔

وي این او کے لئے حکومت کی طرف سے ہدایات جاری کئے جانے سے حوصلہ پاکر ڈاٹاونڈ نے موبائل ورچول نیٹ ورک آپریٹر پروجیکٹ پر۱۰۰؍ کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ کمپنی کے بانی اور چیف ایگزیکٹو آفیسر سنيت سنگھ تلی نے ایجنسی  کے ساتھ بات چیت میں اس ہدایت کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے۱۰۰؍ کروڑ لوگ اب بھی انٹرنیٹ خدمات سے محروم ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ دیہی علاقوں میں لوگ اس کے لئے سالانہ کم سے کم۱۲۰۰؍ روپے خرچ کرنے کی پوزیشن میں نہیں ہیں۔ اس کے پیش نظر ان کی کمپنی محض ۱۰۰؍ روپے سالانہ فیس پر عام لوگوں کو انٹرنیٹ دینا چاہتی ہے۔ اس کے تحت گاہک ہر طرح سے انٹرنیٹ کا استعمال کر سکیں گے۔

۳؍جی اور۴؍ جی صلاحیت والے سستے موبائل فون اور ٹیبلٹ بنانے والی ڈاٹاونڈ کے سی ای او نے کہا کہ اب بھی ان کی کمپنی ریلائنس کمیونی کیشنز اور ٹیلی نار کے ساتھ مل کر اپنے گاہکوں کو ایک سال تک مفت انٹرنیٹ خدمات فراہم کر رہی ہے۔ اس کے لئے بہت سی دیگر کمپنیوں سے ان کی بات چیت جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو ٹیلی کام کمپنی وی این او انفراسٹرکچر پہلے تیار کرے گی ان کی کمپنی اس کے ساتھ معاہدہ کر کے دیوالی سے پہلے صارفین کو سستی انٹرنیٹ سروس دینا چاہتی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ ٹیلی کام محکمہ نے اس کے لئے ہدایات جاری کی  ہیں جس میں درخواست دینے کے۶۰؍ دن کے اندر اندر لائسنس دینے کی بات کہی گئی ہے۔ وي این او کے لئے ہر ٹیلی سرکل کے لئے ۷.۵؍ کروڑ روپے کی نان ریفنڈیبل فیس دینی ہوگی اور ہر سروس کے لئے الگ الگ فیس لگے گی۔

Rate this item
(0 votes)

Related items