آواز سے تیز رفتار کار

آواز سے تیز رفتار کار All images are copyrighted to their respective owners.

برطانیہ کی آواز سے تیز رفتار یا سپر سونک موٹرکار ’بلڈ ہاؤنڈ‘ کے کاک پِٹ کو تیار کر کے فٹ کر لیا گیا ہے۔ڈرائیور اینڈی گرین جو اس موٹر کار

کو زمین پر رفتار کا اپنا ہی ریکارڈ توڑنے کے لیے استعمال کریں گے، اسے ’میرا ہزار کلومیٹر فی گھنٹہ دفتر‘ کہتے ہیں۔ بلڈ ہاؤنڈ کی مکمل تیاری میں اب بھی ایک سال کا عرصہ درکار ہے۔منصوبہ یہ ہے کہ اس موٹر کار کو سنہ 2015 کی خزاں میں جنوبی افریقہ لے جایا جائے گا اور اس کے ذریعے وہاں تیز رفتاری کا موجودہ ریکارڈ توڑ دیا جائے گا جو فی الحال 763 کلومیٹر فی گھنٹہ ہے۔ اس کار کی مدد سے سنہ 2016 میں ہزار کلومیٹر فی گھنٹہ سے تیز رفتار کا ریکارڈ قائم کیا جائے گا۔بلڈ ہاؤنڈ کا کاک پِٹ اتنا تنگ نہیں ہے جتنا فارمولا ون ریسنگ کار کا ہوتا ہے۔گاڑی کا وزن تقریباً 200 کلو گرام ہے اور یہ کاربن فائبر سے بنے ہیں۔اینڈی گرین کی سیٹ ان کی جسمانی ساخت کے مطابق بنائی گئی ہے جبکہ سٹیئرنگ بھی ان کے ہاتھوں کی مناسبت سے بنایا گیا ہے۔اینڈی نے بی بی سی نیوز کو بتایا کہ ’تیز رفتار موٹر کاروں میں سٹیئرنگ کی استعمال کی ضرورت نسبتاً زیادہ ہوتی ہے۔‘ڈرائیور کے سامنے ڈسپلے پر صرف وہ معلومات دی جاتی ہیں جو انھیں گاڑی کو کنٹرول کرنے کے لیے ضروری ہوتی ہیں۔مرکزی سکرین پر سپیڈو میٹر ہوتا ہے جس سے ڈرائیور کو اندازہ ہوتا ہے کہ کب رفتار تیز کرنے کے لیے راکٹ چلانا ہے اور کب کنٹرول کے لیے بریک کا پیرا شوٹ استعمال کرنا ہے۔رولکس کمپنی کا مہیا کردہ کردہ ٹائمر بھی اس میں موجود ہے۔اینڈی گرین نے کہا کہ ’میں اس گاڑی کو ہزار کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلاؤں گا۔ تو مجھے اس کے ہر پرزے کے بارے میں اعتماد ہونا چاہیے۔ یہ گاڑی چلانے کا کام سپیڈ، درستگی، کنٹرول اور تحفظ کے بارے میں ہے۔‘

Rate this item
(0 votes)