موسمِ گرما اور انار

موسمِ گرما اور انار All images are copyrighted to their respective owners.

قرآن مجید میں انار کو رمّان کے نام سے پکارا گیا ہے

انار ایک مشہور و معروف درخت کا پھل ہے ۔ اس کا درخت دس پندرہ فٹ سے لیکر بیس فٹ تک اونچا دیکھا گیاہے ۔اس کا تنا پتلا ہوتا ہے جسکا قطر تین چار فٹ سے زیادہ نہیں ہوتا ۔ انار کے درخت کی چھال زردی مائل بھوری ہوتی ہے ۔ پتے سبز اور ذرا ذرا لمبے اور نوکدار ہوتے ہیں ۔ پھول کا رنگ سرخ ہوتا ہے ۔ انار نہایت خوش ذائقہ رسیلا پھل ہے ۔ مزے کے لحاظ سے کھٹا ، میٹھا اور کھٹ میٹھا تین قسم کا ہوتا ہے ۔ پرانے حکیم انار کے غذائی اور دوائی فائدوں سے اچھی طرح واقف تھے ۔ جدید تحقیق بھی اس کی تصدیق کرتی ہے ۔ انار سے خون کی پیدائش اور بدن کی پرورش میں مدد ملتی ہے اور خون حالت اعتدال پر رہتا ہے ۔ انار کا چاشنی دار رس طبیعت میں خوشی پیدا کرتا ہے ۔ پیاس بجھاتا ہے اور ساتھ ہی ساتھ بدن کو اچھی غذائیت بھی دیتا ہے ۔ اللہ تعالی نے جسمانی اور روحانی دونوں قسم کے مریضوں کے لئے انار کو معجزہ بنایا ہے اور اکثر امراض اس کے استعمال سے دور ہوجاتے ہیں ۔

قرآن مجید میں انار کو رمّان کے نام سے پکارا گیا ہے ۔ قرآن مجید میں ارشاد ہے ’’نیک اور صالح عمل کرنے والوں کے لئے انار کے درختوں کو جھکادیا جائے گا تاکہ وہ ان درختوں کا پھل آسانی سے اپنے استعمال میں لاسکیں‘‘ ۔ انار جنت کا پھل ہے ۔ انار کا درخت بے شمار خوبیوں کا حامل ہے ۔ پھل سے جڑ تک اس کے ہر اجزاء کارآمد ہیں۔

ایسے بہت سے امراض ہیں جن میں انار کا استعمال کیا جاتا ہے ۔ جیسے نزلہ زکام ، ضعف بصر ، آشوب چشم ، کان اور ناک کی بیماریاں جیسے بہرہ پن ، کان کا ورم ، مسوڑھوں سے خون آنا ، دانتوں کا ہلنا ، سینہ اور پھیپھڑوں کی بیماریاں ، بلغم میں خون آنا ، کھانسی ، سینہ میں درد ، معدہ اور آنتوں کی بیماریاں ، قئے ، پیٹ کا درد ، ہونٹوں کی سفیدی ، اسہال و پیچش ، پیٹ کے کیڑے ، مقعد کی بیماریاں ، بواسیر ، دل اور جگر کی بیماریاں ، خفقان ، ضعف قلب ، یرقان ، جلد کی بیماریاں ، عورتوں اور بچوں کی بیماریاں ، سیلان الرحم وغیرہ ۔ اس کے علاوہ انار سے لاجواب خضاب بھی تیار کیا جاتا ہے ۔ انار کے مرکبات بھی بنائے جاتے ہیں ۔ اور انار کا درخت اور ان کے تمام حصے کپڑے رنگنے کے کام آتے ہیں ۔

صفراوی اور خونی بخار میں ، جب مریضوں کے لئے ٹھوس غذا کا استعمال مناسب نہیں ہوتا ، انار کا رس مریضوں کی پیاس بجھاتا ہے اور حرارت کو کم کرتا ہے اور غذائیت کی وجہ سے بدن میں طاقت پیدا کرتا ہے ۔ صفراوی بخار کے مریضوں کو قئے اور متلی کی شکایت ہو ، دست آرہے ہوں تو وہ بھی انار کے استعمال سے بند ہوجاتے ہیں ۔ انار غذا کو ہضم کرنے میں مدد دیتا ہے۔ اس کے دانوں کو سکھا کر چورن میں ملاتے ہیں جو غذا ہضم کرنے کے لئے کھائے جاتے ہیں ۔

انار کھانے سے پروسٹیٹ کینسر کا خطرہ کم ہوجاتا ہے ۔ ایک ریسرچ کے مطابق انار کے دانوں کا جوس اور پورے انار کا عرق استعمال کرنے سے سرطانی خلیات بے جان ہوجاتے ہیں ۔ اسی طرح چھاتی کے سرطان کے بڑھنے کا خطرہ بھی گھٹ جاتا ہے ۔ جرنل آف ڈرماٹولوجی میں شائع رپورٹ کے مطابق انار کھانے سے جلد سرطان کی دو اہم اقسام سے حفاظت ہوجاتی ہے ۔ جلد کے ان سرطانوں کے نام Basal cell Carcinoma اور Spuamous cell Carcinoma ہیں ۔ انار DNAکو تحفظ فراہم کرتا ہے ۔ انار بلڈ پریشر کو نارمل حد کے اندر رکھتا ہے ۔ انار میٹابولک سنڈروم کو باقاعدہ بناتا ہے ۔ اس سے خون میں شکر کی سطح معمول کی حد میں رہتی ہے ۔ انسولین سے حساسیت بہتر ہوجاتی ہے ۔ انار جسمانی وزن کم کرتا ہے ۔ انار انفکشن سے بھی بچاتا ہے۔

Rate this item
(0 votes)